کورونا وائرس، ٹرمپ کی آج یومِ دعا منانے کی اپیل

کورونا وائرس، ٹرمپ کی آج یومِ دعا منانے کی اپیل

نیویارک(صدائے سچ نیوز)کورونا وائرس کی پھیلنے والی وبا اور تشویش ناک صورتِ حال کی وجہ سے امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی عوام سے آج یومِ دعا منانے کی اپیل کی ہے۔

صدر ٹرمپ نے برازیلی صدر سے پچھلے ہفتے عشائیے پر ملاقات کی تھی، اس موقع پر برازیلی صدر کے پریس سیکریٹری بھی موجود تھے جن کا بعد میں کورونا ٹیسٹ مثبت نکلا تھا۔

اس صورتِ حال میں امریکا اور برازیل دونوں کے صدور کو کورونا ٹیسٹ کرانا پڑا تاہم دونوں کا ٹیسٹ منفی آیا ہے، اب نائب صدر مائیک پنس نے کہا ہے کہ وہ اور ان کی اہلیہ بھی چاہیں گے کہ ان کا کورونا ٹیسٹ کرلیا جائے۔

صدر ٹرمپ کے کورونا ٹیسٹ کا نتیجہ منفی نکلا ہے تاہم ملک میں تشویش ناک صورتِ حال پر صدر ٹرمپ نے امریکا بھر میں آج یومِ دعا منانے کا اعلان کیا ہے۔

ادھر انٹر نیٹ کی دنیا کا سب سے بڑا سرچ انجن گوگل امریکی حکومت کے ساتھ مل کر کورونا وائرس سے متعلق ایک ویب سائٹ تیار کر رہا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس حوالے سے پریس کانفرنس کرتے ہوئے اعلان کیا کہ وائٹ ہاؤس گوگل کے اشتراک سے ایک ویب سائٹ بنا رہا ہے جس سے لوگوں کو کورونا وائرس کے متعلق رہنمائی اور ٹیسٹ کے حوالے سے سہولت میسر ہو گی۔

انہوں نے بتایا کہ اس سائٹ پر صارفین سے کورونا کی علامات کو جانچنے کے لیے چند سوالات پوچھے جائیں گے جن کے جواب پر یہ سائٹ ناصرف یہ طے کرے گی کہ صارف کو کورونا کے ٹیسٹ کی ضرورت ہے یا نہیں بلکہ یہ کورونا کی علامات والے صارفین کی قریبی کورونا ٹیسٹ کے کلینک یا لیبارٹری تک رہنمائی بھی کرے گی۔

صدر ٹرمپ نے یہ بھی کہا کہ اس ویب سائٹ کی تیاری کے لیے گوگل کے 1 ہزار سے زائد انجینئرز کام کر رہے ہیں اور ممکن ہے کہ یہ آج (اتوار کی) رات تک تیار ہو جائے گی۔

امریکا نے کل سے برطانیہ اور آئر لینڈ سے امریکا سفر پر پابندی کا اعلان کیا ہے، پیر کے بعد امریکی شہریوں کا بھی اپنے ملک میں داخلہ مشکل ہو گا۔

امریکا میں کورونا مریضوں کی تعداد مسلسل بڑھ رہی ہے، امریکا کی اعلیٰ ترین یونیورسٹیوں میں سے ایک جان ہاپکنز کے میڈیکل پروفیسر ڈاکٹر مارٹی نے عوام کو خبردار کیا ہے کہ ملک میں مریضوں کی جو تعداد آپ کے سامنے آرہی ہے اس پر یقین نہ کریں، امریکا میں 16سو کیسز تو ایسے ہیں جن میں بیماری کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔

ڈاکٹر مارٹی کے مطابق ہر بیمار شخص سے وائرس 25 سے 50 افراد میں پھیلنے کا خدشہ ہوتا ہے، اس لیے امریکا میں کورونا کے کیسز کی تعداد 50 ہزار سے 5 لاکھ ہوسکتی ہے۔

انہوں نے لوگوں کو مشورہ دیا ہے کہ کورونا کی بیماری کو انتہائی سنجیدگی سے لیا جائے کیونکہ پولیو کے بعد کورونا دنیا میں بدترین وبا ثابت ہو گا۔

مہلک کورونا وائرس نے66 دن میں دنیا کے 152 ممالک میں افراتفری پھیلا دی ہے، وائرس کے سبب چین کے بعد یورپی ممالک میں بھی سڑکیں اور بازار سنسان پڑے ہیں۔

کورونا وائرس سے 152 ملکوں میں ہلاکتوں کی تعداد 5 ہزار 835 سے زیادہ ہو گئی ہے۔

کورونا سےیورپ میں سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک اٹلی کو کل سے مکمل طور پر بند کر دیا جائے گا، وہاں صرف میڈیکل اسٹورز اور سپر مارکیٹس کھلی رہیں گی۔

اٹلی کے بعد کورونا وائرس کے باعث اسپین اور فرانس میں بھی آج سے مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے۔

روس نے پولینڈ اور ناروے کی سرحدوں سے غیر ملکیوں کی آمد و رفت روک دی ہے۔

اسپین کے وزیرِ اعظم کی اہلیہ بھی کورونا وائرس کا شکار ہوگئی ہیں جبکہ اسپین بھر میں وائرس کے پھیلاؤ کے سبب آج سے مکمل لاک ڈاؤن کا آغاز ہو گیا ہے۔

فرانس میں بھی تاریخی ایفل ٹاور سمیت عوامی مقامات بند کر دیے گئے ہیں، ڈنمارک، چیک ری پبلک، سلواکیہ، آسٹریا، ہنگری، روس اور یوکرین نے غیر ملکیوں کے لیے اپنی سرحدیں بند کر دی ہیں۔

پولینڈ نے اپنے تمام ایئر پورٹس بند کر دئیے ہیں جس کے بعد یورپی سیاح براستہ سڑک پولینڈ چھوڑنے پر مجبور ہیں۔

جرمنی میں بھی وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے 50 سے زائد افراد کی تقاریب پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

فلسطین میں مساجد میں نماز اور گرجا گھروں میں عبادت معطل کر دی گئی ہے جبکہ گھروں میں عبادت کی تلقین کی گئی ہے۔

جنگ زدہ شام میں کورونا وائرس کےباعث آئندہ ماہ ہونے والے پارلیمانی انتخابات ملتوی کرنے کا اعلان کیا گیا ہے، جبکہ وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے قطر، اردن اور عرب امارات نے بھی سفری پابندی عائد کر دی ہے۔

x

Check Also

حفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی کے چیئرمین کے عہدہ سے ہٹا دیاگیا

حفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی کے چیئرمین کے عہدہ سے ہٹا دیاگیا

اسلام آباد(صدائے سچ نیوز)وزیراعظم عمران خان نے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی ...