آرمی چیف سروس توسیع،وزیراعظم کے سیکرٹری اعظم خان نےعمران حکومت کو مروا دیا

آرمی چیف سروس توسیع،وزیراعظم کے سیکرٹری اعظم خان نےعمران حکومت کو مروا دیا

اسلام آباد(حسیب شاہ۔صدائے سچ نیوز)وزیر اعظم کے سیکرٹری محمد اعظم خان نے آرمی چیف کی سروس میں توسیع کے معاملے پر عمران خان حکومت کو مروا دیا۔

سپریم کورٹ میں شرمندگی اور عوامی سطح پر شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔حکومتی حلقے آرمی چیف کی سروس میں تین سال توسیع کے معاملے میں بدانتظامی کا ذمہ دار وزیر اعظم کے سیکرٹری اعظم خان کو قرار دے رہے ہیں۔

حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ آرمی چیف کی تقرری اور سرو س میں توسیع کیلئے وفاقی حکومت سمری کابینہ کو بھجواتی ہے ،کابینہ کی منظوری کے بعد وزیر اعظم اس کی منظوری دے کر صدر پاکستان کے پاس بھجواتے ہیں ،جن کی منظوری کے بعد باقاعدہ نوٹیفیکیشن جاری کیا جاتا ہے لیکن وزیر اعظم کے سیکرٹری محمد اعظم خان نے انتہائی عجلت میں 19اگست کو وزیر اعظم سے موجودہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی سروس میں تین سال کی توسیع کا نوٹس خطے کی صورتحال کے تحت وزیر اعظم عمران خان کے دستخط سے جاری کروا دیا۔

جب انہیں اس غلطی کا اندازہ ہوا تو کابینہ کے ارکان کو وزیر اعظم سیکرٹریٹ کے ڈائریکٹر کے ذریعے تمام کابینہ کے ممبران کو ان کے دفتر اور گھر پر بائی ہینڈ سمری بھجوا کر رائے لی۔

کابینہ کے 25اراکین میں 14تو اس وقت اسلام آباد میں موجود نہیں تھے ،صرف 11نے ہاں کر کے سمری واپس بھجوائی جس کے بعد وزیر اعظم نے سمری صدر پاکستان عارف علوی کو بھجوا کر منظوری لی جبکہ دوسری طرف صدر پاکستان نے منظوری تو دی لیکن چند دن پہلے تک ٹی وی چینلزکو انٹرویو کے دوران یہ کہتے رہے کہ جیسے ہی وزیر اعظم کی طرف آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کی سروس میںتین سال توسیع کی سمری آئے گی وہ فورا منظوری دے دیں گے جبکہ سرکاری ریکارڈ کے مطابق وزیر اعظم کے دستخطوں سے آرمی چیف کی توسیع کا نوٹیفکیشن 19اگست کو جاری ہوا۔

x

Check Also

حفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی کے چیئرمین کے عہدہ سے ہٹا دیاگیا

حفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی کے چیئرمین کے عہدہ سے ہٹا دیاگیا

اسلام آباد(صدائے سچ نیوز)وزیراعظم عمران خان نے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کو کابینہ کمیٹی توانائی ...