بنیادی صفحہ » ایکسکلوسوز » کوٹ لکھپت جیل، نواز شریف سے ملاقات کا سلسلہ جاری

کوٹ لکھپت جیل، نواز شریف سے ملاقات کا سلسلہ جاری

 

لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کوٹ لکھپت جیل پہنچ گئیں ہیں جہاں وہ اپنے والد سے ملاقات کریں گی۔

سابق صدر پاکستان ممنون حسین بھی (ن) لیگ کے قائد سے ملاقات کے لیے کوٹ لکھپت جیل پہنچ گئے ہیں۔

سابق صدر ممنون حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی صحت اتنی اچھی نہیں ہے اور ملک میں مہنگائی کا طوفان آیا ہو ہے۔ ہم نے تعلیم اور حصت کے شعبوں میں بہت کام کیے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان ملک کو ٹھیک طریقے سے نہیں چلا ہے اور موجودہ صدر کے بارے میں مجھے کوئی علم نہیں ہے۔

لیگی رہنما سیف الملوک کھوکھر بھی کوٹ لکھپت جیل پہنچ گئے ہیں جہاں وہ سابق وزیراعظم  سے ملاقات کریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ اپنے قائد سے ملنا ہر انسان اور کارکن کا آئینی حق ہے۔ حکومت کو چاہیئے کہ اپنا کام کرے اور سیاسی انتقام نہ لے۔

اس کے علاوہ مئیر لاہور کرنل ریٹائرڈ مبشر جاوید کی بھی کوٹ لکھپت جیل آمد ہو چکی ہے جہاں وہ نواز شریف سے ملاقات کے منتظر ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ہمارے قائد کو غلط طریقے سے جیل میں رکھا ہوا ہے۔

اس کے علاوہ (ن) لیگ کے دیگر کارکنان اور پارٹی رہنماوں کا بھی کوٹ لکھپت جیل آمد کا سلسلہ شروع ہو چکا ہے۔

اس سے قبل پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما آصف کرمانی اور ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی گورچانی نے بھی سابق وزیر اعظم پاکستان سے ملاقات کی۔

نواز شریف سے آج کوٹ لکھپت جیل میں ملاقات کا دن ہے جس کے لیے دوپہر 2 بجے تک کا وقت مقرر ہے۔ اس دوران نواز شریف کے اہل خانہ اور پارٹی رہنماؤں سمیت دیگر افراد ان سے ملاقات کے لیے آئیں گے۔

سیکیورٹی خدشات کو مد نظر رکھتے ہوئے جیل کے باہر پولیس کی اضافی نفری تعینات کر دی گئی ہے۔ پارٹی رہنماوں کی گاڑیوں کو جیل کے باہر روک لی گیا ہے اور حتمی فہرست آنے کے بعد اندر جانے کی اجازت دے دی جائے گی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

وزارت اطلاع+ات کے سابق ملازم کی بیٹی مبینہ طور پر سسرالیوں کے ہاتھوں قتل

وزارت اطلاعات کے ملازم کی بیٹی مبینہ طور پر سسرالیوں کے ہاتھوں قتل

اسلام آباد(صدائے سچ نیوز)حواکی ایک اور بیٹی سسرالیوں کے تشدد سے جاں بحق ہوگئی،والدین کی ...