بنیادی صفحہ » ایکسکلوسوز » وزارت اطلاعات کے دو افسران رفیق سومرو،نائلہ مقصود جبری ریٹائرمنٹ کی زد میں آگئے

وزارت اطلاعات کے دو افسران رفیق سومرو،نائلہ مقصود جبری ریٹائرمنٹ کی زد میں آگئے

وزارت اطلاعات کے دو افسران رفیق سومرو،نائلہ مقصود جبری ریٹائرمنٹ کی زد میں آگئے

اسلام آباد(صدائے سچ نیوز)انفارمیشن گروپ کے دو افسران حکومت کی بیس سال کے بعد جبری ریٹائرمنٹ کی پالیسی کی زد میں آگئے ہیں جن میں پریس رجسٹرار نائلہ مقصود جو کہ انفارمیشن گروپ کی گریڈ 20کی افسر ہیں اور رواں سال ستمبر میں ان کی ریٹائرمنٹ ہونیوالی ہے جبکہ دوسرے افسر پریس کونسل آ ف پاکستان کے رجسٹرار رفیق سومرو ہیں جو کہ انفارمشن گروپ کے گریڈ 20کے افسر ہیں ان کی ملازمت 2023میں پوری ہونے والی ہے۔

دونوں افسران کا سروس ریکارڈ اچھا نہ ہونے کی وجہ سے دو مرتبہ یا اس سے زائد مرتبہ پروموشن بورڈ کی میٹنگ میں سپرسیڈ ہوئے۔

اس حوالے سے موجودہ حکومت نے ایک گائیڈلائن دی تھی کہ جو افسران دو مرتبہ ترقی میں سپرسیڈہوئے ہیں اور ان کی سروس 20سال یا اس سے زیادہ ہے انہیں جبری ریٹائر کر دیا جائے۔

وزارت اطلاعات کی ایک اور گریڈ 20کی افسر ثریا جمال کو پروموشن بورڈ کی میٹنگ کے دوران ایک دفعہ سپرسیڈ اور دو مرتبہ ان کا نام ترقی کیلئے ڈیفر کیا گیا ہے تاہم ان کے حوالے سے ابھی یہ فیصلہ ہونا باقی ہے کہ وہ جبری ریٹائرمنٹ کی اس پالیسی کی زد میں آتی ہیں یا نہیں۔

x

Check Also

سابق MQM سینیٹر طاہر مشہدی پیپلز پارٹی میں شامل

سابق MQM سینیٹر طاہر مشہدی پیپلز پارٹی میں شامل

ایم کیو ایم کے سابق سینیٹر طاہر مشہدی پیپلز پارٹی میں شامل، اس بات کا اعلان انہوں نے پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے صدر نثار کھوڑو کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کیا۔