تازہ ترین
بنیادی صفحہ » ایکسکلوسوز » وزارت اطلاعات کے ملازم کی بیٹی مبینہ طور پر سسرالیوں کے ہاتھوں قتل

وزارت اطلاعات کے ملازم کی بیٹی مبینہ طور پر سسرالیوں کے ہاتھوں قتل

اسلام آباد(صدائے سچ نیوز)حواکی ایک اور بیٹی سسرالیوں کے تشدد سے جاں بحق ہوگئی،والدین کی درخواست پر پوسٹ مارٹم،پوسٹ مارٹم کے بعد سسرال والوں نے میت والدین کے حوالے کرنے سے صاف انکارکردیا۔

وزارت اطلاعات کے ملازم کی بیٹی مبینہ طور پر سسرالیوں کے ہاتھوں قتل

تفصیلات کے مطابق وزارت اطلاعات ونشریات کے ریٹائرڈ سرکاری آفیسر سید شبیر حسین شاہ بخاری نے کہا کہ جب سے ان کی دختر کی شادی عبدالباقی شاہ سے ہوئی ہے سسرال والوں کا ظلم جاری ہے،شوہر بیرون ملک ہے جبکہ ساس اور سسر نے آج تک ہمیں اپنی بیٹی سے ملنے نہیں دیا حتی کہ نواسے نواسیوں کوبھی نہیں ملنے دیتے تھے،کئی بار انہوں نے کہا کہ ہم اپنے بیٹے کی دوسری شادی کریں گے اور ہماری بیٹی کو جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی دیں اس کے باوجود ہم خاموش رہے لیکن گزشتہ رات اچانک ہمیں فون کرکے بتایاگیا کہ آپ کی بیٹی ہارٹ اٹیک سے انتقال کرگئی ہے،جبکہ ہماری بیٹی بالکل صحتمندتھی ۔

ہماری پوسٹ مارٹم کی درخواست کے بعد میت کی تدفین بذات خود کرنے کیلئے ہم نے کہا تو انہوں نے میت دینے سے صاف انکار کردیا ہے۔ہم وزیر اعظم عمران خان،چیف جسٹس آف پاکستان سے انصاف کی اپیل کرتے ہیں ہمیں فوری طور پر انصاف دیاجائے تاکہ مزیدحوازادیاں ایسے مظالم کا شکار نہ ہوں۔

x

Check Also

تھانہ شہزاد ٹاؤن کی حدود میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے شہری زخمی، پولیس کا مقدمہ درج کرنے سے انکار

تھانہ شہزاد ٹاؤن کی حدود میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے شہری زخمی، پولیس کا مقدمہ درج کرنے سے انکار

تھانہ شہزاد ٹاؤن کی حدود میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے شہری زخمی، پولیس کا مقدمہ درج کرنے سے انکار