بنیادی صفحہ » ایکسکلوسوز » نواز شریف کا کئی سرکاری افسران کو غیر قانو نی طور پر مکان الاٹ کرنے کا سیکنڈل

نواز شریف کا کئی سرکاری افسران کو غیر قانو نی طور پر مکان الاٹ کرنے کا سیکنڈل


اسلام آباد(تبسم عباس شاہ سے)سابق وزیراعظم میاں محمدنوازشریف کی جانب سے سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے قواعد و ضوابط کے برخلاف سرکاری افسران اور ججز کو سرکاری رہائش گاہیں الاٹ کرنے کا ایک کیس کھل گیا ہے اس حوالے سے رپورٹ مزید کاروائی کیلئے وزیراعظم عمران خان کو بھجوادی گئی ہے مذکورہ رپورٹ کے مطابق ایڈیشنل سیکرٹری بورڈ آف انویسٹمنٹ سلیم احمد رانجھاکو ایف سیون تھری،اسسٹنٹ کمشنر آئی سی ٹی سعد بن اسد کو جی سکس ٹو راجہ فر خ علی سول جج کو ایف سکس فور ، ایس پی زاہدہ بخاری کو کیٹگری ٹو آئی ایٹ ون ، پولیس سروس گروپ کے افسر نثار احمد خان کو جی سکس تھر ی ، وقاص احمد راجہ سول جج کو ایف سکس فور ، شبیر احمد اسسٹنٹ رجسٹرار کو جی سکس فور اور پاکستان ایڈ منسٹر یٹو سروس گروپ کے کیپٹن علی اصغر کو جی سکس فور میں مکان الاٹ کرنے کے علاوہ دیگر افسران کو بھی قواعد و ضوابط کی خلاف وزری کرتے ہوئے مکانات الاٹ کیے گئے اور غلط طور پررول فور (تھری ) کے تحت کہ افسران کو 3ماہ کے اندر مکان خالی کرنے کے بیان حلفی کے بعد الاٹ کی جاتی ہیں لیکن مذکورہ افسران کورول فور (تھری ) کی آڑ میں مستقل طور الاٹمنٹ کی گئی ہے اس ضمن میں اسٹیٹ آفیسر سے جب رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ تمام افسران کو سابق وزیراعظم نواز شریف نے مذکورہ مکان الاٹ کیے ہیں اس میں اسٹیٹ آفس کا کردار نہیں ہے اس حوالے سے متعلقہ اتھارٹیز کو باضابطہ طور پر آگا کردیا گیا ہے ۔جبکہ ایڈیشنل سیکرٹری بورڈآف انویسٹمنٹ سلیم احمد رانجھا کا موقف جاننے کیلئے ان کے موبائل نمبر 0300-8443300پر رابطہ کیا گیا تو لیکن انہوں نے فون اٹینڈ ہی نہیں جس کی وجہ سے انکا موقف معلوم نہ ہوسکا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

شمالی وزیرستان: دہشت گردوں کا فوجی چیک پوسٹ پر حملہ

شمالی وزیرستان: دہشت گردوں کا فوجی چیک پوسٹ پر حملہ

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے پاک فوج کی غریوم چیک پوسٹ پر حملہ کیا۔